Jun 20, 2010

حیات مغرب میں رکھا کیسا یہ جنوں مفہوم ہے

حیات مغرب میں رکھا کیسا یہ جنوں مفہوم ہے
مشرق اپنے ہی گھر لٹکی تصویر مغموم ہے

تعبیر تعمیر میں تھا سرگرداں ایمان مسلمان تب بھی
بیتابی تب نہ تھی ہیجان خیز داستان فارس و روم ہے

امید گھر جلاتے اپنے ہی آتش شوق زماں میں
ہاتھوں میں رکھتے انگار خود تو مجسم موم ہے


باد اُمنگ  /  محمودالحق

1 تبصرے:

شازل said...

ہاتھوں میں رکھتے انگار خود تو مجسم موم ہے
بہت خوب
کیا بات ہے

Post a Comment

تازہ تحاریر

تبصرے

سوشل نیٹ ورک